بچوں کی موجیں ختم، تعلیمی ادارے کھولنے سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا





لاہور (نیوز ڈیسک) : پنجاب میں تعلیمی ادارے کھولنے سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا۔تفصیلات کے مطابق پنجاب میں تعلیمی ادارے مکمل طور پر کھولنے میں بس چند روز ہی رہ گئے ہیں۔ حکومت کی جناب سے پرائمری اور ایلیمنٹری سکولز یکم فروری سے کھولنے کا اعلان کیا گیا تھا اور اب ں تعلیمی ادارے کھولنے سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے۔نوٹیفیکیشن کے مطابق پرائمری اور ایلیمنٹری سکولوں میں

تعلیمی سرگرمیاں یکم فروری سے شروع ہوں گی۔محکمہ اسکول ایجوکیشن کے جاری کیے گئے مراسلے کے مطابق فیصلے کا اطلاق صوبے بھر کے نجی و سرکاری تعلیمی اداروں سمیت مدرسوں پر ہو گا۔نوٹیفیکیشن میں مزید کہا گیا ہے کہ تعلیمی اداروں میں کورونا ایس او پیز پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے۔دوسری جانب وزیر تعلیم پنجاب مراد راس نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 18 جنوری نویں دسویں کی کلاسز کھل جائیں گے۔کورونا کے دوران تعلیم کا سب سے زیادہ نقصان ہوا،25 سے پہلے پہلی جماعت سے آٹھویں جماعت تک کلاسیں کھل جائیں گی۔ جب کہ یکم فروری سے یونیورسٹیاں بھی کھول دی جائیں گی۔ایک وقت میں سکول میں 50 فیصد سے زائد بچوں کی بٹھانے کی اجازت نہیں ہو گی۔مراد راس نے مزید کہا کہ اگر سکولز دوبارہ بند کرنا پڑے تو فوری طور پر بند کر دیں گے۔امتحانات سے متعلق بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ کہہ رہے ہیں امتحانات اگست میں ہوں، لیکن میں چاہتا ہوں کہ امتحانات مئی میں ہوں۔انہوں نے مزید کہا کہ اس بار کسی بچے کو بغیر امتحانات کے پاس نہیں کریں گے۔قبل ازیں انہوں نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے پہلے بھی لاک ڈاؤن کیا تھا، کورونا کی صورتحال کچھ بہتر لگ رہی تھی، کورونا کیسز کا گراف تھوڑا نیچے آگیا ہے، میرا خیال ہے جس طرح ہم نے باقی سیکٹرز ایس اوپیز کے کھول رکھے ہیں، اب ہم دوبارہ کھولنے جارہے ہیں، ایس اوپیز پر عمل کروائیں گے، سکول کھولنے کا ایک مشکل فیصلہ ہے کیونکہ سب سے زیادہ نقصان بچوں کا ہورہا ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes




اپنا تبصرہ بھیجیں