ڈسکہ الیکشن میں مبینہ دھاندلی، ن لیگ نے کیس کی سماعت عوام کے سامنے کرنے کا مطالبہ کردیا




لاہور (نیوز ڈیسک) ڈسکہ الیکشن میں مبینہ دھاندلی کیخلاف الیکشن کمیشن کی جانب سے کیس کل سننے کا فیصلہ، ن لیگ نے کیس کی سماعت عوام کے سامنے کرنے کا مطالبہ کردیا ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ن لیگ کے سینئر نائب صدر اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ڈسکہ الیکشن میں مبینہ دھاندلی کی سماعت

عوام اور کیمروں کے سامنے کرنے کا مطالبہ کردیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ شاہد خاقان عباسی نے 20 پریزائیڈنگ افسران کے غائب ہونے پر بھی سوال اٹھا تے ہوئے کہا ہے کہ افسران کے اغواء ہونے سے پہلے کے فارم 45 ان کے پاس موجود ہیں۔ اچانک ایک ساتھ اغواء اور ایک ساتھ بازیابی مشکوک ہے ۔ شاہد خاقان عباسی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ این اے 75 میں ڈاکہ ڈالا گیا، الیکشن کمیشن خود کہہ رہا ہے کہ اس الیکشن میں دھاندلی ہوئی ہے۔مسلم لیگ ن کی فتح کو شکست میں تبدیل کرنے کی سازش کی گئی، اس لئے مطالبہ ہے کہ جو سماعت ہو وہ عوام کے سامنے اور ٹی وی کیمروں کے سامنے ہو ۔ خیال رہے کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ڈسکہ این اے 75ضمنی الیکشن میں 23 پولنگ اسٹیشنز کے نتائج روکنے کا معاملہ سماعت کیلئے مقرر کردیا ،چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 5رکنی بنچ کل سماعت کرے گا، الیکشن کمیشن سماعت کے بعد انتخابی نتائج جاری کرنے یا نہ کرنے سے متعلق فیصلہ سنائے گا۔بتایا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ڈسکہ این اے 75 ضمنی الیکشن میں 23 پولنگ اسٹیشنز کے نتائج روکنے کا معاملے کو سماعت کیلئے مقرر کردیا ہے۔ چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 5 رکنی بنچ کل صبح 10بجے کیس کی سماعت کرے گا، الیکشن کمیشن نے ریٹرننگ اآفیسر کو طلب کرلیا ہے۔ ریٹرننگ آفیسر تحقیقاتی رپورٹ پر اپنا بیان دیں گے۔الیکشن کمیشن نے ن لیگ کی انتخابی امیدوار سیدہ نوشین افتخار کو بھی نوٹس جاری کردیا ہے، الیکشن کمشین سماعت کے بعد انتخابی نتائج جاری کرنے یا نہ کرنے سے متعلق فیصلہ سنائے گا۔

50% LikesVS
50% Dislikes




اپنا تبصرہ بھیجیں